پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ کسانوں کے منصوبہ بند احتجاج نے حکومت ہند کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی عوام کے طاقت سے خوفزدہ ہے یہی وجہ ہے کہ دفعہ 370 کی منسوخی کے بعد جموں و کشمیر میں خوف و دہشت کا ماحول پیدا کیا گیا۔

موصوفہ نے ان باتوں کا اظہار دلی سرحد پر کسانوں کے زرعی اصلاحات کے قوانین کے خلاف جاری احتجاج کے ردعمل میں اپنے ایک ٹویٹ میں کیا۔

موصوفہ نے ان باتوں کا اظہار دلی سرحد پر کسانوں کے زرعی اصلاحات کے قوانین کے خلاف جاری احتجاج کے ردعمل میں اپنے ایک ٹویٹ میں کیا۔

انہوں نے لکھا: ‘کسانوں کے احتجاج نے حکومت ہند کو گھٹںے ٹیکنے پر مجبور کر دیا ہے۔ بی جے پی عوام کے طاقت سے مرعوب ہے اور یہی وجہ ہے کہ دفعہ 370 کی منسوخی کے بعد جموں و کشمیر میں خوف و دہشت کا ماحول پیدا کیا گیا۔ پرامن اختلاف رائے پر پابندی لگانا ان کے تمام محاذوں پر ناکام ہونے اور گھبراہٹ کا ثبوت ہے’۔

بتادیں دلی کے سرحد پر کسانوں کی طرف سے تین زرعی قوانین کے خلاف احتجاج جاری ہے۔

مرکزی حکومت اور کسان لیڈروں کے درمیان جمعرات کو ایک میٹنگ منعقد ہوئی جس کے بعد کسان تنظیموں نے دعویٰ کیا کہ حکومت نے تینوں زراعتی اصلاحات کے قوانین میں ترمیم کرنے کا عندیہ دیا ہے۔

 

The put up کسانوں نے حکومت ہند کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر دیا: محبوبہ مفتی appeared first on Kupwara Times.



Source by [author_name]